مسجد کی ازسرنوتعمیر

مسجد کی عمارت ۴۳سال پرانی ہےاور اس سبب عبادات میں آۓدن خلل واقع ہوتارہتاہے، جیساکہ اذان یا ذکر کی آواز کا جاپانی پڑوسیوں کو سنائی دینا، برسات اور برفباری کے موسم میں مسجد میں پانی کا رسنا، مسجد کے فرش سے نماز کے دوران یاچلتے وقت آواز کا آناکیوں کہ فرش کی لکڑی بوسیدہ ہوچکی ہے، کیوں کہ اس مسجد کو کسی منصوبہ کے تحت تعمیر نہیں کیا گیا تھا اسلئے موجودہ عمارت بوسیدہ ہونے کے ساتھ ساتھ مسلمانوں کی دینی ضروریات جیسے کہ میت کو غسل دینا، خواتین کیلئے الگ وضو کی جگہ کا ہونا وغیرہ کو پورا کرنے کیلئے ناکافی ہے۔

 لہٰذاموجودہ مسجد کو شہید کرکے اس جگہ پر نئی مسجد تعمیر کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے لیکن بدقسمتی سے ہم مالی مشکلات کا شکار ہیں اور مسجد میں جمع ہونے والا چندہ انتہائی حد تک ناکافی ہے، مسجد کی تعمیر کرنا ہم سب مسلمانوں کا اجتماعی فرض ہےلہٰذا آپ تمام مسلمانوں سے درخواست کی جاتی ہے کہ اس کارِخیر میں دل کھول کر حصہ لیں اور اللہ کے گھر کی تعمیر کیلئے عطیات دیں کہ اللہ کی راہ میں خرچ کرنے سے رزق و روزگار میں برکت ہوتی ہے اور یہ ثواب جاریہ ہے جوکہ ہمارے مرنے کے بعد ہماری قبر میں بھی کام آئے گا۔

 (لن تنالوا البر حتى تنفقوا مما تحبون وماتنفقوا من شيئ فإن الله به عليم)

تم ہرگز بھلائی کو نہ پہنچو گے جب تک راہ خدامیں اپنی

پیاری چیز خرچ نہ کرو اور تم جو خرچ کرو اللہ کو معلوم ہے

(قرآن اٰل عمران۹۲)